ذات پرماڑ پتر بنوانا کیسا ہے؟ از مفتی نظام الدین رضوی 

ذات پرماڑ پتر بنوانا کیسا ہے؟ از مفتی نظام الدین رضوی

الجوابــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ

اس میں کوئی حرج نہیں بنوا سکتے ہیں، کیونکہ یہ تقسیم اور بٹوارہ آپ نے نہیں کیا ہے حکومت نے کیا ہے، حکومت نے یہ بٹوارہ پس ماندہ قوموں کو

مالی امداد فراہم کرنے اور ان کو اوپر اٹھانے کے لئے کیا ہے، ہاں پسماندگی کی بنیاد ذات برادری پر رکھی ہے جبکہ دوسری برادری میں بھی

پسماندہ لوگ پائے جاتے ہیں. امیر غریب کا بٹوارہ شریعت نے بھی کیا ہے مثلا زکوۃ کا حکم یہ ہے کہ وہ غریب و فقیر مسلمانوں کو دی جائے، آپ

سوچ سکتے ہیں کہ جب مسلمان مسلمان برابر ہیں تو سب کو دینا چاہیے صرف غریبوں اور فقیروں کو ہی دینے کا حکم کیوں ہوا مگر یہ سوچ درست

نہیں کہ مسلمان مسلمان ضرور برابر ہیں، مگر غنی اور فقیر تو برابر نہیں، فقیر اور امیر تو برابر نہیں، یہ امداد کا مسئلہ ہے اور اس میں سب برابر

نہیں کہ جو غنی و مال دار ہیں انہیں امداد مالی کی حاجت نہیں اور جو فقیر و محتاج ہیں انہیں حاجت ہے. ہاں جن معاملات میں تمام مسلمان برابر

ہیں ۔

وہ پانچ چیزیں ہیں ۔
جان کی حفاظت
مال کی حفاظت
عقل کی حفاظت
نسب کی حفاظت
دین کی حفاظت
ان پانچ چیزوں میں سب مسلمان برابر ہیں ۔

غریبی اور امیری کا بٹوارہ تو خود اللہ تعالی نے کیا ہے، اس لئے اگر ہم مدد کریں گے تو سب سے پہلے غریب کی مدد کریں گے ۔

واللہ تعالی اعلم
کتبہ : مفتی نظام الدین رضوی جامعہ اشرفیہ مبارکپور

Leave a Reply

%d bloggers like this: