سعودیہ میں رہنے والا کیا دیوبندی وہابی کے پیچھے نماز پڑھ سکتا ہے ؟

سعودیہ میں رہنے والا کیا دیوبندی وہابی کے پیچھے نماز پڑھ سکتا ہے ؟

سوال : حضور ایک مسئلہ علمائے کرام کی بارگاہ اقدس میں عرض ہے کہ ہم سنیوں کا عقیدہ ہے کہ وہابی دیوبندی کے پیچھے سنیوں کی نماز نہیں ہوتی ہے اب کوئی سنی صحیح العقیدہ سعودیہ عربیہ مسجد کی صاف صفائی کے کام میں گیا تو آدمی کیا کرے گا اگر اس کے پیچھے نماز پڑھتا ہے تو ہوتی نہیں، اور نہیں پڑھتا ہے تو گنہگار ہوتا ہے ایسی صورت میں اب وہ کیا کرے اور اس آدمی کا وہاں دو یا تین سال رہنا ہوتا ہے؟

الجوابـــــــــــــــــــ

یہ شخص تنہا نماز پڑھے ۔ اور اس کے لیے جو صورت ممکن ہو اپناے، ہاں اگر تحقیق سے معلوم ہو جائے کہ اس مسجد کا امام سنی ہے تو اس کی اقتداء میں جماعت سے نماز پڑھے ۔ اگر ممکن ہو تو اپنے گھر میں نماز پڑھے لیکن کسی بھی وہابی دیوبندی کے پیچھے نماز نہ پڑھے ۔

واللہ تعالی اعلم

کتبــــــــــــــــہ : مفتی نظام الدین رضوی جامعہ اشرفیہ مبارکپور

Leave a Reply