کیا جماعت چھوٹنے کے خوف سے تیمم کر سکتے ہیں ؟

کیا جماعت چھوٹنے کے خوف سے تیمم کر سکتے ہیں ؟

جماعت کھڑی ہے اور وضو کھانے پر کافی بھیڑ ہے اگر وضو کرتے ہیں تو جماعت چلی جائے گی تو کیا ایسے حالات میں تیمم

کرسکتے ہیں؟

جوابــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ

نہیں ۔ ایسی صورت میں تیمم نہیں کرسکتے، بلکہ وضو کریں اور اگر جماعت چلی جائے اور الگ جماعت کرنا ممکن ہو تو الگ

جماعت کرلیں ورنہ تنہا نماز پڑھ لیں لیکن بغیر وضو بنائے نماز نہ پڑھیں کہ وضو فرض ہے اور جماعت واجب اور واجب کے لیے

فرض نہیں چھوڑا جائے گا ۔

حدیث شریف میں ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا: لا تقبل صلوة من احدث حتي يتوضأ ۔”

بے وضو کی نماز مقبول نہیں ہوگی یہاں تک کہ وہ وضو کرلے۔

نماز عبادت مقصودہ سے ہے اور اس سے مقصود ثواب ہے تو جب ثواب ہی نہ ملے گا تو نماز بھی نہ ہوگی اور نماز مقبول نہ

ہوگی تو ثواب بھی نہ ملے گا۔

والله تعالى اعلم بالصواب

کتبــــــــہ : مفتی نظام الدین رضوی جامعہ اشرفیہ مبارک پو ر 

Leave a Reply